اجڑے ہوے لوگوں سے گریزا نھ کیا کرحالات کی قبروں کے کتبے بھی پڑا کر
ہر وقت کا ہنسنا تجھے برباد نھ کر دے
ثنھای کے لمحوں میں کبھی رو بھی لیا کر